زامران: پاکستانی فوج پر سنائپر حملوں کی ذمہ داری بی ایل اے نے قبول کی۔

0
104

بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان جیئند بلوچ کا میڈیا کو جاری کردہ بیان کے مطابق سرمچاروں نے زامران میں تین مختلف حملوں میں قابض پاکستانی فوج اور جاسوس کیمرے کو نشانہ بنایا۔

حملوں میں دو دشمن اہلکار ہلاک اور جاسوس کیمرہ تباہ ہوگئے۔

انہوں نے کہاکہ بی ایل اے کے سرمچاروں نے 23 جون کو زامران کے علاقے لد کور میں تین بجے کے قریب قابض پاکستانی فوج کے پوسٹ پر تعینات اہلکار کو سنائپر حملے میں نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہلاک ہوگیا۔

ترجمان نے کہاکہ دریں اثناء سرمچاروں کے ایک اور دستے نے دشمن فوج کی جانب سے جاسوسی کیلئے نصب کیمرے کو بھی نشانہ بناکر تباہ کردیا۔

مزید کہاکہ بلوچ لبریشن آرمی کے سرمچاروں نے گذشتہ روز ایک اور کاروائی میں زامران کے علاقے پگنزان میں سنائپر حملے میں پاکستانی فوج کے اہلکار کو ہلاک کردیا۔ مذکورہ اہلکار دشمن فوج کے پوسٹ پر تعینات تھا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں