دوحہ: افغان شہریوں کی رہائی کے بدلے دو امریکی قیدیوں کو رہا کیا جا سکتا ہے۔ ذبیح اللہ مجاہد

0
31

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ان خیالات کا اظہار ترجمان طالبان نے دوحہ میں اقوام متحدہ اور 30 سے زائد غیرملکی خصوصی ایلچیوں سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کیا۔

ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ امریکا کی بدنام زمانہ جیل گوانتاناموبے میں ابھی افغانی قید ہیں جن کی رہائی کے لیے امریکا کے افغانستان میں خصوصی ایلچی سے بات چیت ہوئی ہے۔

ترجمان طالبان نے مزید بتایا کہ افغانستان کی جیل میں اس وقت 2 امریکی شہری قید ہیں اور ہم ان کو رہا کرسکتے ہیں لیکن اس کے بدلے امریکا بھی گوانتانا موبے سے افغان قیدیوں کو رہا کرے۔

امریکا کی جانب سے تاحال اس بات پر کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا۔

یاد رہے کہ ترجمان طالبان کی قیادت میں افغان وفد اس وقت دوحہ کے دورے پر ہیں اور افغانستان میں خواتین کے مسائل سمیت اہم امور پر مذاکرات جاری ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں