مقبوضہ بلوچستان: گوادر،جیونی میں پانی کی قلت برقرار،عوام سڑکوں پر

0
206

مقبوضہ بلوچستان کا ضلع گوادر جو سی پیک کا مین حب ہے،گزشتہ کئی عرصوں سے پانی کی قلت کی وجہ سے عوام شدید مشکلات کا شکار ہیں۔

گوادر شہر سمیت ساحلی پٹی میں عوام پانی نہ ہونے کی وجہ سے سخت مشکلات کا شکار ہیں،گوادر شہر،جیونی سمیت اورماڑہ میں بھی لوگ سراپا احتجاج ہیں۔

گوادر اور جیونی میں خواتین اور بچوں کا اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج، ایکسپریس وے پر دھرنا دیا گیا۔بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر کے گزروان وارڈ مکینوں نے ایکسپریس وے پر تنصیب ایوی مشینری سے سخت و شدید ویبریشن کی وجہ سے غریب مقامی ماہی گیروں کیگھروں پر دراڈیں پڑنے کی وجہ سے ماہی گیر مرد و خواتین نے احتجاجاََ اپنے گھروں سے نکل کر ایکسپریس وے روڑ پر دھرنا دے کر کام بند کرا دی۔

مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ کہ سوریج لائن کی جلد مرمت اور گھروں کو جو نقصانات پہنچے ہیں ان کا مناسب معاوضہ دی جائے سیوریج لائنوں کے جلد مرمت اور کام جلد شروع کیا جائے۔

احتجاجی دھرنے میں خواتین اور بچّوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی،گوادر پورٹ انتظامیہ اور اے سی گوادر راجہ اطہر عباس مذاکرات کے لیے پہنچ گئے، ذرائع کے مطابق 15 دن کے اندر اندر گھروں کی مرمت اور سیوریج لائین کا کام شروع کیا جائے گا۔

ایکسپریس وے پر موجود مظاہرین اور ضلعی انتظامیہ کے درمیان مذاکرات کامیاب رہے اور کئی گھنٹوں بعد ایکسپریس وے کو ٹریفک کے لئے کھول دیا گیا۔واضع رہے کہ پہلے بھی ڈپٹی کمشنر نے اس علاقے کا تفصیلی دورہ بھی کیا تھا۔ علاقہ مکینوں کے خدشات و تحفظات دور کرنے کا وعدہ کیا لیکن اس پر عملدر آمد کی نہیں کیا گیا۔

بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر کے تحصیل جیونی میں پانی کی قلت کے خلاف عوام ایک بار پھر سراپا احتجاج بن گئے۔

منگل کے روز جیونی کے شہریوں نے بڑی تعداد میں احتجاج کرتے ہوئے مرکزی بازار میں ریلی نکالی اور پانی کی عدم فراہمی کے نعرہ بازی کی گئی،مظاہرین نے کہا کہ جیونی میں پانی کی قلت پیدا کیا گیا ہے،

مظاہرین کا کہنا ہے کہ جیونی میں پانی کی قلت کا مسئلہ کہیں دہائیوں سے چلتا آرہا ہے مگر محکمہ پبلک ہیلتھ، ضلعی انتظامیہ، منتخب نمائندے، اور صوبائی حکومت پانی بحران پر قابو کرنے میں سنجیدہ نہیں ہیں اْنہیں جیونی کے شہریوں کی مشکلات اور تکالیف کا کوئی احساس تک نہیں ہے اور صرف یقین دہانیوں پر جیونی کے مکینوں کو ٹرخا رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ جیونی کے مکین پانی کی بروقت عدم دستیابی کی وجہ سے شدید پریشانی و مشکلات کے شکار ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں