مقبوضہ بلوچستان:نوشکی سے چھ نوجوان پاکستانی فورسز ہاتھوں جبری لاپتہ

0
53

مقبوضہ بلوچستان کے ضلع نوشکی سے چھ نوجوان لاپتہ کردیے گئے۔

ضلع نوشکی شہر سے متصل علاقہ قادر آباد سے گذشتہ رات پاکستانی فورسز نے گھروں پر چھاپے مارے اوراس دوران پانچ نوجوانوں کو حراست میں لیکر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا جن کے حوالے سے تاحال کوئی معلومات نہیں مل سکی ہے۔

علاقہ مکینوں نے بتایا کہ گذشتہ رات دو بجے کے قریب پاکستانی فورسز فرنٹیئر کور اور سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاروں نے بڑیتعداد میں علاقے میں آکر گھروں پر دھاوا بول دیا، اس دوران خواتین سمیت دیگر افراد کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔جبری طور لاپتہ افراد میں چودہ سالہ ادریس ولد حاجی اکبر، چودہ سالہ بلال ولد صاحب خان، پندرہ سالہ جلیل ولد صاحب خان،سترہ سالہ زبیر ولد میر احمد، بیس سالہ خالد ولد منیر شامل ہیں۔
گذشتہ رات نوشکی شہر سے متصل علاقہ قادر آباد سے لاپتہ ایک اور نوجوان کی شناخت افتخار بلوچ ولد بدل خان کے نام سے ہوئی ہے جو میٹرک کا طالب علم ہے۔مذکورہ نوجوان کو بھی گذشتہ رات پاکستانی فورسز نے گھروں پر چھاپے دوران حراست میں لیکر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا۔ گذشتہرات لاپتہ کیے جانے والے نوجوانوں کی تعداد چھ ہوگئی جبکہ ان میں چودہ سالہ طالبعلم بھی شامل ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں