پاکستانی فورسز پر بلوچ فریڈم فائٹرز کے حملوں میں شدت،مزید چار حملے

0
35

مقبوضہ بلوچستان کے ضلع گوادر و،تربت اور قلات میں پاکستانی فورسز پر بلوچ سرمچاروں فریڈم فائٹرز کے چار حملے جانی و مالی نقصان کی اطلاعات۔

گذشتہ روز 28دسمبر شام چار بجے گوادر کے علاقے کنڈاسول میں تنک کے مقام پر قائم پاکستانی فوج کی ایک چوکی پرسرمچاروں نے اسنائپر سے حملہ کیا جس سے قابض فوج کا ایک اہلکار ہلاک ہوا ہے۔حملے کے بعدپاکستانیی فوج نے اندھا دھند مارٹر گولے فائر کئے۔

اسی طرح 26دسمبرکوتربت شہرمیں سرمچاروں نے سنیما چوک پر قائم دشمن فورسز کی چوکی پر دستی بم سے حملہ کیا۔ 26 دسمبر کے روز رات 9 بجے تربت شہر میں جوسک میں قائم فوجی چوکی پر بھی دستی بم حملہ کیا،دونوں حملوں میں فورسز کو نقصان پہنچایا۔

بعد میں ان حملوں کی زمہ داریی بی ایل ایف نے قبول کی تھی۔میجر گہرام نے کہا کہ بی ایل ایف گوادراور تربت میں فورسز پرتینوں حملوں کی ذمہ داری قبول کرتی ہے اوربلوچستان سے انخلا تک دشمن پر حملوں کا سلسلہ جاری رہے گا۔
گذشتہ شب قلات میں ایک دستی بم حملے میں پولیس تھانے کو نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں پولیس فورس کو جانی و مالی نقصان اٹھانا پڑا۔ جسکی ذمہ داری بلوچ لبریشن آرمی نے قبول کی تھی۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں