حماس کے نائب سربراہ کی موت کے بعد حزب اللہ کا بدلہ لینے کا اعلان

0
23

گزشتہ روز حماس کے نائب سربراہ سینئر رہنما صالح العروری کی اسرائیل ڈران حملے میں موت کے بعد حزب اللہ نے بدلہ لینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل کو صالح العاروری کی شہادت کی بھاری قیمت چکانی ہوگی۔

2 جنوری کو اسرائیلی ڈرون سے بیروت کے جنوبی علاقے دانیہ میں واقع حماس کے دفتر پر رات گئے حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں صالح سمیت 6 افراد مارے گئے۔

اس حوالے سے رائٹرز نے اسرائیلی فورسز سے رابطے کی کوشش کی لیکن انہوں نے کوئی جواب نہ دیا۔

بعدازاں قطری نشریاتی ادارے الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق لبنان کی تنظیم حزب اللہ کے رہنما حسن نصر اللہ کی جانب سے بیان جاری کیا گیا کہ لبنانی سرزمین پر کسی بھی گروہ یا مزاحمتی دھڑے کی طرف سے ٹارگٹڈ حملے کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور اس کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل کے اس جرم کو نظرانداز نہیں کریں گے، اس کا بھرپور بدلہ لیا جائے گا، ہمارے مزاحمت کار اپنے اصولوں، وعدوں اور کمٹمنٹ کو نبھانے کے لیے بندوقوں کے ٹرگر پر اپنی انگلیاں جما کر مکمل طور پر تیار ہیں۔

اس کےعلاوہ حماس کے رہنما اسماعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ فتح اور آزادی تک جہاد جاری رہے گا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں