اسرائیلی فوج کا شام پر راکٹوں سے شدید حملہ، حزب اللہ کے پانچ ارکان سمیت 38 ہلاک

0
28

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق شام کی وزارت دفاع نے کہا تھا کہ حلب پر اسرائیل اور حزب اللہ کے فائٹرز کے درمیان کے حملوں کے بعد متعدد شہری اور فوجی اہلکار جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، اسرائیلی حملوں کے بعد دھماکوں کی آوازیں دور دور تک سنی گئی۔

دوسری جانب اسرائیلی حکام نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے شام میں حزب اللہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔

رائٹرز کے مطابق سیکیورٹی ذرائع نے انہیں بتایا ہے کہ آج صبح سویرے ہونے والے حملوں میں لبنانی گروپ حزب اللہ کے 5 فائٹرز مارے گئے ہیں، یہ واضح نہیں ہے کہ آیا وہ شہید ہونے والے 38 میں شامل ہیں۔

قبل ازیں یہ رپورٹ سامنے آئی تھی کہ برطانیہ میں قائم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے کہا ہے کہ اسرائیلی حملے حلب کے انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے قریب ہ میگزین یا اسلحے کے ڈپو کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں بڑے دھماکے ہوئے۔

شامی وزارت دفاع نے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’جارحیت کے نتیجے میں متعدد شہری اور فوجی اہلکار شہید اور زخمی ہوئے اور سرکاری اور نجی املاک کو نقصان پہنچا‘۔

7 اکتوبر کے بعد سے اسرائیل نے شام میں ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا کے اڈوں پر اپنے حملوں میں اضافہ کر دیا ہے، اس نے شامی فوج کے فضائی دفاع اور کچھ شامی افواج کو بھی نشانہ بنایا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں