مقبوضہ بلوچستان: پاکستانی فورسز نے مزید تین بلوچ نوجوانوں کو لاپتہ کر دیا

0
100

مقبوضہ بلوچستان سے مزید تین افراد پاکستانی فورسز اور خفیہ اداروں کے ہاتھوں گرفتاری کے بعد لاپتہ ہوگئے، ان میں سے ضلع کیچ سے دو اور ایک نوجوان خضدار سے لاپتہ ہوا ہے۔

کیچ سے لاپتہ ہونے والوں کی شناخت سمیر مراد اور رستم حسن کے ناموں سے ہوئی ہے،جوکہ طالب علم بتائے جاتے ہیں۔مقامی ذرائع کے مطابق دونوں نوجوان طالب علموں کو فورسز نے 9 جون کو کیچ کے مرکزی شہر تربت سے ہیرونک جاتے ہوئے دوران سفر حراست میں لے کر لاپتہ کردیا ہے۔

دریں اثنا ادھر خضدار کے علی ہسپتال سے پاکستانی خفیہ اداروں نے ایک شخص کو حراست میں لے لاپتہ کردیا ہے جسکی شناخت وسیم ولد شریف کے نام سے ہوئی ہے۔

یادرہے کہ بلوچ طالب علموں اور نوجوانوں کی جبری گمشدگی پاکستانی فوج کی جانب سے ہردن شدت اختیار کرتا جارہا ہے۔ گذشتہ روز فورسز نے کوئٹہ سے بھی دو طالب علموں کو حراست میں لے کر لاپتہ کردیا تھا۔

بلوچستان میں لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے کوئٹہ و کراچی میں گذشتہ ایک دہائی سے پرامن احتجاج ماما قدیر بلوچ کی سربراہی میں جاری ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں