پاکستان کی جانب امدادی گئی گندم خوراک کے قابل نہیں ہے، افغان حکومت

0
19

افغان حکومت کی جانب سے جاری ایک تازہ بیان کے مطابق افغانستان کو پاکستان کی جانب سے بطور امداد دی گئی گندم خوراک کے قابل نہیں اور غیر معیاری ہے۔افغان حکومت کے رکن نے افغان میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پاکستان کی جانب سے جو پچاس ہزار ٹن گندم بطور امداد افغانستان کو فراہم کی گئی وہ دراصل بلکل غیر معیاری ہیں پاکستان حکومت کے جانب سے فراہم کردہ گندم استعمال کے قابل نہیں تھا-

یاد رہے اس وقت افغانستان میں خوراک و دیگر سہولیات کے شدید قلت ہیں جسے نئی افغان حکومت امداد کے ذریعے کنٹرول کرنے کی کوشش کررہی ہے تاہم طالبان حکومت کو ہمسائے ممالک کے جانب سے خاطر خواہ مدد نہیں مل سکی ہے-

دوسری جانب پاکستان کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ انکی حکومت نے مہنگے داموں پر نئے گندم درآمد کرکے ہمسائے ملک افغانستان میں خوراک کی کمی کو روکنے کے لئے بطور امداد طالبان حکومت کو گندم فراہم کی ہے تاہم افغان حکومت اس امداد سے مطمئن نظر نہیں آرہی-

افغان حکومت کے مطابق پاکستان سے آنے والا امدادی گندم غیر معیاری ہونے کے باعث استعمال نہیں کئے جاسکے ہیں۔افغانستان کی نئی حکومت شدید مشکلات میں گھرا ہوا ہے اور دوسری طرف امریکہ کے جانب سے افغانستان کے بیرون ملک بینک اکاؤنٹس منجمد کردئے گئے ہیں تاہم اس سے قبل پچھلی حکومت میں بھارت کے جانب سے شروع کی گئی سرمایہ بھی اب محدود ہوکر بھارتی حکومت کے جانب سے روک دی گئے ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں