ایران نے موساد سے تعلق کے جرم میں چار افراد کو پھانسی دے دی

0
11

ایرانی عدلیہ کی ویب سائٹ ‘میزان آن لائن’ کی رپورٹ کے مطابق یہ چاروں افراد اسرائیلی خفیہ سروس سے تعلق رکھنے والے ایک گروہ کے رکن تھے اور اتوار کے روز ان کو پھانسی دے دی گئی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ان افراد پر “اغوا کرنے، ہتھیار تیار کرنے اور ڈیجیٹل کرنسی میں معاوضہ حاصل کرنے” کے الزامات تھے۔ ایرانی سپریم کورٹ کی جانب سے سزائے موت کے فیصلے کے چار روز بعد انہیں پھانسی دے دی گئی۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ملزمان کے پاس سزا کے خلاف اپیل کا کوئی قانونی راستہ نہیں بچا تھا۔

نیم سرکاری خبر رساں ایجنسی مہر نیوز ایجنسی کے مطابق تین دیگر افراد کو قومی سلامتی کے خلاف سرگرمیوں، اغوا میں مدد کرنے اور غیر قانونی ہتھیار رکھنے کے الزامات میں پانچ سے 10برس تک قید کی سزائیں دی گئی ہیں۔

ایران میں مجرموں کو پھانسی دینے کی سزا پر اکثر عمل ہوتا رہتا ہے اور ہر برس سینکڑوں افراد کو پھانسی پر لٹکا دیا جاتا ہے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل کے مطابق سن 2021 میں تہران نے کم از کم 314 افراد کو پھانسی پر لٹکا دیا۔ یہ تعداد مذکورہ برس مشرق وسطیٰ میں پھانسی  دی جانے والی مجموعی تعداد کا نصف سے زیادہ ہے۔

گزشتہ ستمبر میں ایران کی اخلاقی پولیس کی حراست میں ایک کرد ایرانی خاتون مہسا امینی کی موت ہوجانے کی وجہ سے اس وقت ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں