مقبوضہ بلوچستان: ایک بلوچ نوجوان زیر حراست قتل

0
7

مقبوضہ بلوچستان کے علاقے خاران سے پاکستانی فورسز کے ہاتھوں جبری گمشدگی کے شکار صلاح الدین سیاپاد نامی نوجوان نیم مردہ حالت میں بازیابی کے بعد زندگی کی بازی ہار گئے۔صلاح الدین سیا پاد ولدظفر سیاپاد کو خاران سے 27 فروری رات دو بجے ایف سی نے گھر پر چھاپہ مار کر ایک دوست سمیت ماورائے عدالت حراست میں لے کر جبری طور پرلاپتہ کردیا تھا۔

دوران حراست ایف سی نے صلاح الدین سیاپاد کو غیر انسانی تشدد کا نشانہ بنایا اور بے ہوشی کی حالت میں اسے خاران شہر میں پھینک دیا۔
علاقائی ذرائع کے مطابق صلاح الدین کے اہلخانہ نے اسے علاج کیلئے فوراً کوئٹہ منتقل کیا جہاں وہ جانبر نہ ہوسکے اور شہید ہوگئے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ ایف سی کی غیر انسانی تشدد کے باعث نوجوان کے دونوں گردے فیل ہوچکے تھے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں