تربت: فورسز کے ہاتھوں نوجوان لاپتہ

0
17

بلوچستان کے ضلع تربت سے پاکستانی فورسز نے ایک شخص کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام منتقل کردیا ہے۔

لاپتہ ہونے والے نوجوان کی شناخت بالاچ ولد محمد خالد کے نام سے ہوئی ہے۔

مذکورہ نوجوان کو گذشتہ شب ایک بجے فورسز نے تربت کے علاقے سنگانی سر سے حراست میں لے کر لاپتہ کردیا ہے۔

دریں اثنا بلوچ وائس فار جسٹس کے بیان میں کہا گیا ہے کہ تربت سے چار نوجوانوں کو جبری طور پر فورسز نے لاپتہ کیا ہے لاپتہ نوجوانوں میں سے دو کی شناخت سرفراز ولد ایوب جسے آبسر سے اس کے دکان سے اٹھایا گیا ہے جبکہ بالاچ ولد خالد کو سنگانی سر سے فورسز نے اٹھا کر جبری لاپتہ کردیا ہے، بلوچ نوجوانوں کی جبری گمشدگی میں ایک دفعہ پھر تیزی لائی گئی ہے اور بلوچستان کے مختلف علاقوں سے گزشتہ کچھ روز میں متعدد نوجوان جبری لاپتہ کردئیے گئے ہیں جو انتہائی تشویشناک عمل ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ بلوچ وائس فار بلوچ جسٹس تربت سے جبری لاپتہ کئے گئے سرفراز اور بالاچ کی فی الفور بازیاب کا مطالبہ کرتی ہے اور انسانی حقوق کی تنظیمیں سے اپیل کرتی ہے کہ بلوچستان میں جبری گمشدگیوں کا نوٹس لے کر لاپتہ افراد کی بازیابی کے لئے کردار ادا کریں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں