مقبوضہ بلوچستان:پاکستانی فوج پر حملہ7 اہلکار ہلاک۔

0
149

بلوچ لبریشن آرمی نے پاکستانی فوج پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی

بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان جیئند بلوچ نے جاری بیان میں کہا ہے کہ سرمچاروں نے گذشتہ شام کوہلو کے علاقے کاہان میں پاکستانی فوج کے دو پوسٹوں پر حملہ کرکے ایک پوسٹ کو مکمل قبضے میں لیلیا۔ حملے میں دشمن کے 7 اہلکار ہلاک اور 5 زخمی ہوئے۔ اس حملے کی ذمہ داری بی ایل اے قبول کرتی ہے۔

بی ایل اے کے سرمچاروں نے گذشتہ شام کاہان میں قابض پاکستانی فوج کے 84 ونگ کے جامک اور کوٹڑی پوسٹ پر مختلف اطراف سے حملہ کرکے کوٹڑی پوسٹ پر مکمل قبضہ کرنے میں کامیابی حاصل کی۔ سرمچاروں کے حملے اور قبضے میں سات فوجی اہلکار موقع پر ہلاک اور پانچ زخمی ہوئے جبکہ بزدل دشمن فوج کے متعدد اہلکار ہتھیار پھینک کر فرار ہوگئے۔ اس دوران سرمچاروں نے جامک پوسٹ کو بھاری ہتھیاروں سے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں دشمن فوج کو جانی اور مالی نقصانات اٹھانے پڑے۔
سرمچاروں نے پوسٹ کو قبضے میں لینے کے بعد وہاں موجود ہتھیاراور گولہ بارود بھاری تعداد میں اپنے قبضے میں لے لی اور قابض فوج کے پوسٹ کو نذر آتش کردیا۔

بی ایل اے شاہو کنڈگ کے مقام پر تعینات لیویز فورس کو تنبیہہ کرتی ہے کہ وہ مذکورہ مقام کو چھوڑ کر خالی کردیں، اس سے قبل ہم متعدد بار لیویز اہلکاروں کو بلوچ تحریک کے سامنے رکاوٹ بننے سے گریز کرنے کی تاکید کرچکے ہیں مگر مذکورہ پوسٹ پر تعینات اہلکار باز نہیں آرہے۔ شاہو کنڈگ لیویز پوسٹ کو خالی نا کرنے کی صورت میں مذکورہ پوسٹ پر شدید نوعیت کے حملے کیئے جائیں گے۔
بلوچ لبریشن آرمی بلوچوں کا قومی فوج ہے، اپنی سرزمین اور لوگوں کا دفاع ہمارا فرض ہے۔ آج قابض دشمن جس طرح معصوم بلوچ شہریوں کے گھروں گدانوں کو نذر آتش کررہا ہے، ہماری ماوں بہنوں کو سڑکوں پر رلا رہا ہے، اس سے ہمارے نوجوانوں کے عزم و استقلال اور دشمن کیخلاف نفرت میں مزید اضافہ ہورہا ہے۔ بی ایل اے دشمن سے ان تمام ظلم و زیادتیوں کا حساب لے گا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں